ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


جمعرات، 31 دسمبر، 2015

ابھی تو رات کا پہلا پہر نہیں گزرا ۔۔ واجد امیر

واجد امیر
تو کیا عجب کہ ہم ایسے بھی خوار ہونے لگے
بھلے بھلے یہاں رزقِ غبار ہونے لگے
ابھی تو رات کا پہلا پہر نہیں گزرا
ابھی سے دن کے لیے بے قرار ہونے لگے
خدا کا نام لینا بھی جنھیں گوارا نہیں
خدا کی شان وہی تاجدار ہونے لگے
تلاشِ رزق یہ کن راستوں پہ لے آئی
ایک ایک کر کے جدا سارے یار ہونے لگے
تجھے بھی چاہیے دل جوئی ان کی تھوڑی سی
نثار تجھ پہ جو پروانہ وار ہونے لگے
گزرنے لگتی ہیں کترا کے گردشیں اُن سے
ترے اسیروں میں جن کا شمار ہونے لگے
چھپا لیا ہے گھٹاؤں نے مل کے سورج کو
ہوا کی رتھ پہ اندھیرے سوار ہونے لگے
مری تو اپنے مسائل سے جنگ ہے واجد
مری بلا سے کوئی شہریار ہونے لگے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں