ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


جمعہ، 10 اپریل، 2015

فصل گُل آئے چمن لہکیں کھلیں گُل ہر سُو ۔۔ انور زاہدی

دُکھ کی تفہیم ہے کیا درد کسے کہتے ہیں
پوچھو اُن سے جو شب و روز یہی سہتے ہیں
 ریگ صحرا میں بسیں پینے کو پانی نہ ملے
خواب میں دریا ہیں پینے کو پر ترستے ہیں
 فصل گُل آئے چمن لہکیں کھلیں گُل ہر سُو
ہیں قفس میں جو بہاروں کو نہیں تکتے ہیں
 بھری برسات میں بادل کا برسنا معمول
وسط صحرا میں بھی بادل کبھی برستے ہیں
چاند تاروں سے سجے عرش کا جادو کیسا
ہم زمیں زاد ہیں پر عرش کو سمجھتے ہیں
 ابن آدم ہوں مگر میرا مقدر انور
اب ملائک بھی نصیبوں پہ رشک کرتے ہیں


کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں