ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

بدھ، 24 ستمبر، 2014

جادہء عشق راہِ طوری ہے ۔۔ علی اصغر عباس

علی اصغر عباس
جادہء عشق راہِ طوری ہے
یہ محبت بھی رختِ نوری ہے
آپ کے ہاتھ سے ملے تو پھر
آبِ سادہ بھی مئے طہوری ہے
عالمِ کیف میں کیا ہر کام
لاشعوری بھی ہو،شعوری ہے
سرگرانی کو کیا سمجھتے ہو
یہ میاں حالتِ حضوری ہے
جامہء عشق ہے کڑکتی دھوپ
جس کو خورشید سے نہ دوری ہے



اتنا بحران ہے تکلم کا
ان کہی بات بھی ادھوری ہے
دوست جب تخلیے میں ملنا ہو
کیا بھلا روشنی ضروری ہے
آنکھ بھر وصل کی نہ مہلت دے
ہجر کا روگ سنگ چوری ہے
زیست کا ما حصل علی اصغر
ناشکیبائی،نا صبوری ہے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں