ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

بدھ، 30 نومبر، 2016

کہاں گئے ہیں مرے منتظر مرے ہم خواب / میں چُپ ہُوا تو عدم نے یہ دی صدا ، ہمیں مل / الیاس بابر اعوان

الیاس بابر اعوان
سکوت ِقریہ ء بغداد میں ذرا ہمیں مل
ہماری خاک سے پیکر بنا ، قضا ہمیں مل
شعاع ِمہر کبھی دیکھ تو چراغ ِ دیار
شکوہ ِ خواب کبھی بر سر ِ فنا ہمیں مل
پڑے ہوئے ہیں تہہِ آب و گل تہی صورت
ستارہ لوگ ہیں اے دست ِ ارتقا ہمیں مل
ہم اور کتنی نگاہوں کا کشٹ کاٹیں گے
ہمارے خواب کسی روز برملا ہمیں مل
کبھی اے حسن ِ فسوں گر کلام کر خود سے
تُو آئنے کو کبھی دیکھنے کو آ ہمیں مل
یہ باغ ، باغ نہیں ہے حصار خانہ ہے
نجانے کس نے ہمیں دی تھی یہ صدا ہمیں مل
کہاں گئے ہیں مرے منتظر مرے ہم خواب
میں چُپ ہُوا تو عدم نے یہ دی صدا ، ہمیں مل

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں