ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

منگل، 24 مئی، 2016

سعد! یہ حسن بھی کیا شے ہے کہ جب جی چاہے /عشقِ بے نام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ / سعداللہ شاہ

سعداللہ شاہ
چاند جب بام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
دل بھی ہر کام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
گونجتے رہتے ہیں الفاظ مرے کانوں میں 
تو تو آرام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
کھینچتا رہتا ہے فنکار لکیریں اور پھر 
صورتِ خام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
کیا خبر تجھ کو گزرتی ہے مری شب کیسے 
دل تو بس شام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
کیا کہے کوئی کسی سے کہ اذیت کیا ہے 
صید جب دام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
سعد! یہ حسن بھی کیا شے ہے کہ جب جی چاہے 
عشقِ بے نام سے کہہ دیتا ہے اللہ حافظ!
(سعداللہ شاہ)

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں