ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


جمعہ، 26 دسمبر، 2014

بیتی رات کا قصہ اور اک کہانی بس ۔۔ انور زاہدی

انور زاہدی
بیتی رات کا قصہ اور اک کہانی بس
عمر کس طرح گزری پوچھ نہ جوانی بس
یاد اب بھی آتی ہیں پچھلی بار کی باتیں
تیرے ساتھ وہ موسم اور رُت سُہانی بس
 وقت کس طرح بیتا روز و شب کٹے کیونکر
کون یاد رکھے گا کس نے ہے سُنانی بس
 عمر اس طرح گزری جُوں رواں دواں دریا
دیکھا بہتا دریا تو یاد تھی روانی بس
 کس طرح بلاو گے لوٹے وقت کو انور
دن جو رات میں ڈوبا رات تھی دیوانی بس

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں