ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


بدھ، 29 اکتوبر، 2014

مہک رہا تھا زمانے میں کُو بہ کُو ' تِرا غم ۔۔ مجید امجد

مجید امجد
برس گیا ' بَہ خراباتِ آرزُو ' تِرا غم
قدح قدح تِری یادیں' سبُو سبُو 'تِرا غم
تِرے خیال کے پہلو سے اُٹھ کے جب دیکھا
مہک رہا تھا زمانے میں کُو بہ کُو ' تِرا غم
غبارِ رنگ میں رَس ڈھونڈتی کِرن، تِری دُھن
گرفتِ سَنگ میں بَل کھاتی آب جُو ' تِرا غم
ندی پہ چاند کا پَرتَو ' تِرا نِشانِ قَدم
خطِ سَحَر پہ اندھیروں کا رقص' تُو ' تِرا غم
ہے جس کی رَو میں شگوفے' وہ فصل' تیرا دھیان
ہے جس کے لَمس میں ٹھنڈک' وہ گرم لُو ' تِرا غم
نخیلِ زِیست کی چھاﺅں میں' نَے بہ لب تِری یاد
فصیلِ دِل کے کلَس پر سِتارہ جُو ' تِرا غم
طلوُعِ مِہر ' شُگفتِ سَحَر ' سیاہئ شب
تِری طلب ' تجھے پانے کی آرزُو ' تِرا غم
نِگہ اُٹھی تو زمانے کے سامنے ' تِرا رُوپ
پلک جُھکی تو مِرے دِل کے رُو بَہ رُو ' تِرا غم

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں