ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


سوموار، 20 اکتوبر، 2014

شور ِ محشر ہے بپا ، اب کے تری گلیوں میں ۔ عارف خواجہ

عارف خواجہ
دل کے قرطاس پہ تصویر ِ بُتاں کھینچی ہے
دیکھ نہ پائے جہاں کوئی ، وہاں کھینچی ہے
جرم ِ حق گوئی پہ ہر دور کے سلطانوں نے
کھال کھینچی ہے کبھی میری زباں کھینچی ہے
ایک اک کر کے کیا قتل وفا داروں کو
میرے سالار نے ؛ اب مجھ پہ کماں کھینچی ہے
مرشدی خیر ہو ! اِس بار عداوت کی لکیر 
وقتِ ظالم نے مرے تیرے میاں کھینچی ہے
داد دینے پہ مجبور عدو کہ ہم نے
اپنے سینے سے کچھ اِس طور سِناں کھینچی ہے
شور ِ محشر ہے بپا ، اب کے تری گلیوں میں
ایک بیمار نے زنجیر ِ گراں کھینچی ہے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں