ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


جمعہ، 26 ستمبر، 2014

شام ڈھلتے ہی سجاتاہوں نگر خوابوں کا ۔۔ ناصر ملک

ناصر ملک
میں سنبھلتا ہوں، مرا یار مجھے توڑتا ہے
ہاں وہی لہجہءِ بیزار مجھے توڑتا ہے
شام ڈھلتے ہی سجاتاہوں نگر خوابوں کا
ہر نئی صبح کا اخبار مجھے توڑتا ہے
یہ زمانہ تو مجھے توڑ نہیں سکتا مگر
دل کہ اس کا ہے طرف دار، مجھے توڑتا ہے
کیوں سناتا ہے لرزتی ہوئی آواز میں گیت
خود بھی تھک جاتا ہے، بے کار مجھے توڑتا ہے
سوچ میں گم ہے طلسمِ غمِ دوراں کا عدو
کب تلک میرا سزاوار مجھے توڑتا ہے


ذوقِ تعمیر میں وہ چاک پہ رکھتا ہے مجھے
شوقِ تسخیر میں ہر بار مجھے توڑتا ہے
آنکھ میں تاب و طلب بر سرِ پیکار ہوئیں
یہ تماشا سرِ بازار مجھے توڑتا ہے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں