ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


ہفتہ، 7 جون، 2014

عزیز الحقّ کے لیے ۔۔ سعادت سعید

سعادت سعید

وہ میرا آشنا کہ تھا
عذاب ِ جاں میں مبتلا
کِھلی ہوئی تھی ذہن میں
کتاب رنگ چاندنی
کشادگی سے ہم کلام
زعفرانی آگہی
حیات ِ نَو کی اَبتری کے سامنے ڈٹا رہا
شعور کی فسُوں گری کا
سلسلہ بنا رہا
بصیرتوں ' بصارتوں کی
روشنی کا اِسم تھا
رفاقتوں کی حِیلہ جُو
شگفتگی کا اِسم تھا
وہ کُوے فکر ِ واجِبی کے
بوزنوں سے تنگ تھا
ہر ایک بَد مقال کی
عداوتوں سے تنگ تھا
وہ اِنتظار ِ مِیرٹھی کی
پَستیوں پہ نُکتہ چِیں
قیامتوں کی وِحشتوں پہ
مَستیوں پہ نُکتہ چِیں
ملاحتوں کی " بَستیوں " کی
ہَستیوں پہ نُکتہ چِیں
" چراغ ہاے سرد " کا دُھواؑں تھا
اور مَوت تھی
وہ ایک دَور ِ رایگاں کی بجلیاں تھیں
مَوت تھی
بس ایک اُجڑے کارواں کی ہچکیاں تھیں
مَوت تھی

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں