ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

جمعرات، 5 جون، 2014

غزل ۔۔ انور زاہدی

انور زاہدی
تم کہو شام تو پھر شام اُتر آتی ہے
دل پہ شب صورت انعام اُتر آتی ہے
 دن گزرتا ہے خد و خال کے ایوانوں میں
 رات پھولوں میں جوں گُلفام اُتر آتی ہے
 شام پڑتے ہی کھنکتے ہیں اچانک گھنگرو
 رات پازیب میں بسرام اُتر آتی ہے
 رات زُلفوں کی طرح چھاتی ہے کالی کالی
دل میں لے کے وہ ترا نام اُتر آتی ہے
 کچھ تصور میں نہِیں آتا محض تیرے سوا 
رات لے کے ترا پیغام اُتر آتی ہے
 صبح تک رہتا ہے پھر رقص محبت جاری
 عشق کی شکل بہ الہام اُتر آتی ہے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں