ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

منگل، 3 جون، 2014

غزل ۔۔ رضیہ سبحان

رضیہ سبحان
مکاں سے دُور کہیں لامکاں میں رہتی ہوں
زمیں پہ ہوتے ہوئے آسماں میں رہتی ہوں
ہے جسکے ہاتھ میں یہ باگ ڈور عالم کی
بہت سُکون سے اُسکی اماں میں رہتی ہوں
خبر جو لینے چلے ہو یہ حالتِ دل ہے
مجھے خبر ہی کہاں کس جہاں میں رہتی ہوں
ورق ورق پہ ہیں پھیلے حروفِ نا بینا
محبتوں کی ہر اِک داستاں میں رہتی ہوں
حصولِ عشق کی سب کاوشیں ہیں لا حاصل
میں دسترس سے پرے اک جہاں میں رہتی ہوں
ہر اک طلب سے ہوئی بے نیاز و بیگانہ
بسا کے دل میں اُسے آستاں میں رہتی ہوں
سفیر بنکے ہواؤں کی دُور تک جاؤں
میں مشتِ خاک ہوں موجِ رواں میں رہتی ہوں

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں