ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


اتوار، 22 جون، 2014

بارشوں کے موسم میں ۔۔ ڈاکٹر سعادت سعید

ڈاکٹر سعادت سعید
بارشوں کے موسم میں
دل کے مرغزاروں میں
ناگہاں مسرت کی کوکتی ہے خاموشی
پُرہجوم رستوں کی بھیگی ابتری مجھ کو
مشکبار لمحوں کی داستاں سناتی ہے
کوہسار دھلتے ہیں
سبزہ زار دھلتے ہیں
آبشار گاتے ہیں اختلاط کے نغمے
بے لباس پیڑوں کی کپکپاتی بانہوں میں
ابر پوش مدہوشی سرسراتی رہتی ہے
شاخسار دھلتے ہیں
پا کے بند میخانے بادہ خوار رُلتے ہیں
جب مجھے بھگوتی ہیں
آئینہ صفت بوندیں
میری سوئی رعنائی
جاگ جاگ اٹھتی ہے
بے نظیر فطرت کے خوشنما گہر ہر سو
جگمگاتے رہتے ہیں
حاسدوں کے سب ٹولے
میری مسکراہٹ پر عرق ریز ہوتے ہیں!
بارشوں کے موسم میں
چائے خانوں میں اکثر
دھوم دھام ہوتی ہے
الجھنوں کے افسوں گر
نفسیاتی حربوں سے
بے کلی جگاتے ہیں
عیش کام پریوں کو
آئینے دکھاتے ہیں
خوفِ عاقبت کے دیو
خوش خرام گھڑیوں کو
انتباہ کرتے ہیں
انبساط ِپیہم کو
داد خواہ کرتے ہیں

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں