ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


جمعرات، 22 مئی، 2014

غزل ۔۔ شہزاد نیئر

شہزاد نیئر
 ایک ہم ہیں کہ جاں سے کہتے ہیں
سب محبت زباں سے کہتے ہیں
 دل نے ہم سے کہا ادھر دیکھو
درد والے یہاں سے کہتے ہیں
 کہنے سننے سے کچھ نہیں ہوتا
روز ہم آسماں سے کہتے ہیں
 کس کی مانوں کہ سب یقیں والے
اپنے اپنے گماں سے کہتے ہیں
 جو انہیں راہزن سے کہنا تھا
مُڑ کے وہ کارواں سے کہتے ہیں
جس کو سننا تھا وہ تو چھوڑ گیا
اب یہ قصہ جہاں سے کہتے ہیں
 حال ِ بے مہری ِ فلک نیر
ہم بھی کس مہرباں سے کہتے ہیں

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں