ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

بدھ، 14 مئی، 2014

لکھ کے جانا کہ کچھ لکھا ہی نہیں ۔۔ رضی الدین رضی

 رضی الدین  رضی
لکھ کے جانا کہ کچھ لکھا ہی نہیں 
ہم نے جو کچھ کہا ، کہا ہی نہیں 
ربط ایسا ہوا تھا دونوں میں 
پھر کوئی رابطہ رہا ہی نہیں 
چند لوگوں سے بات کرتا ہوں 
وہ بھی ایسے کہ بولتا ہی نہیں 
ہر قدم ساتھ ساتھ رہتا ہے 
دو قدم ساتھ جو چلا ہی نہیں 
قتل ہونا گناہ لگتا ہے 
قتل کرنا تو اب برا ہی نہیں 
اب تو میں جاگتا ہی رہتا ہوں 
پھر کہو گے کہ جاگتا ہی نہیں
اس کو میں کس طرح سے دیکھوں گا
جب مرے پاس آئینہ ہی نہیں 
مجھ کو ایسا دکھائی دیتا ہے 
جیسے اب میں نے دیکھنا ہی نہیں 
میری سانسوں میں بس وہ مہکا ہے 
میں نے جس کو رضی چھوا ہی نہیں 

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں