اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


پیر، 19 مئی، 2014

اقبال طارق کا کلام

اقبال طارق
ختم جو ہوتی نہیں اُن خواہشوں کا سلسلہ ۔۔
اس پہ طارق یہ ہماری ہجرتوں کا سلسلہ ۔۔
رات کے دامن میں کوئی چاند مولا ڈال دے ۔۔
دیکھ تاحدِ نظر ہے ظلمتوں کا سلسلہ ۔۔
درد کے بادل ہمارے سر پہ جب بڑھنے لگے ۔۔
دھیرے دھیر ے چھٹ گیا سب دوستوں کا سلسلہ ۔۔
جو کتاب و حرف سے رکھتا کوئی نسبت نہیں ۔۔
اُس نے شجرے میں لکھا ہے شاعروں کا سلسلہ ۔۔
رُک ہی جائے گا کسی دن دیکھنا تھک ہار کر ۔۔
چاند اور سورج کی ہے جو گردشوں کا سلسلہ ۔۔۔
زیست کی جلتی چتا آنکھوں سے تو بجھتی نہیں ۔۔
پھر بھی آنکھوں سے ہے جاری رحمتوں کا سلسلہ ۔۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں