ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ، دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان سے شائع ہو گیا ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے
اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV


اتوار، 4 مئی، 2014

غزل ۔۔ اعتبار ساجد

اعتبار ساجد
  رویے اور فقرے اُن کے پہلو دار ہوتے ہیں مگر میں کیا کروں یہ میرے رشتہ دار ہوتے ہیں مرے غم پر اُنہیں کاموں سے فُرصت ہی نہیں ملتی مری خوشیوں میں یہ دیگوں کے چوکیدار ہوتے ہیں دلوں میں فرق پڑ جائے تو اس بے درد ساعت میں دلیلیں، منطقیں اور فلسفے بے کار ہوتے ہیں جنہیں صبر و رضا کی ہر گھڑی تلقین ہوتی ہے وہی مظلوم ہر تکلیف سے دو چار ہوتے ہیں بہت قابو ہے اپنے دل پہ لیکن کیا کیا جائے جب آنکھیں خوبصورت ہوں تو ہم لاچار ہوتے ہیں غزل کے شعر خاصا وقت لیتے ہیں سنورنے میں یہ نخرے باز بچے دیر سے تیار ہوتے ہیں اُدھر کا رخ نہیں کرتا کوئی آسودہ دل ساجد جہاں بیٹھے ہوئے ہم نوحہ گر دو چار ہوتے ہیں

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں